Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ

Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ

 

Download free web-based Urdu books, free internet perusing, complete in PDF, Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ – Online Free Download in PDF, Novel Free Download, Online Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ – Online Free Download in PDF, And All Free internet based Urdu books, books in Urdu, heartfelt Urdu books, You Can Download it on your Portable, PC and Android Cell Phone. In which you can without much of a stretch Read this Book. Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ We are Giving the PDF document on the grounds that the vast majority of the clients like to peruse the books in PDF, We make an honest effort to make countless Urdu Society, Our site distributes Urdu books of numerous Urdu journalists.


Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ
“رو کیوں رہی ہوں۔؟
اُسکی آنکھوں میں نمی دیکھ وہ پریشانی سے اُسکا رُخ اپنی جانب کرتا پوچھنے لگا۔وہ اُسکی بات پر سسکی۔
“اپنی بے بسی پر۔”
وہ بھیگے کمدار پلکوں کو رخساروں پر گرائے نم آواز میں بولی۔تو فرغام سلطان اُسکی نم پلکوں پہ لب رکھتا اُسکے پورے وجود میں کپکی ڈورہا گیا۔
“کیسی بے بسی۔؟
اُس سے دور ہوتا اچھنبے سے پوچھنے لگا۔
“اپنی ڈر اور خاموشی کی۔”
وہ آنکھوں کو اوپر اٹھا کر بولی۔۔
“وہاٹ تُم سوگ منا رہی ہو۔تُمھیں خود پر فخر ہونا چاہیے کہ تُم فرغام سلطان کی بیوی چاہت ہو۔کیونکہ تُم وہ انسان ہو جس نے مجھ جیسے پھتر دل انسان کو بدلا ہے اپنی چاہ میں۔اور رونا بند کر دو میں نے تُمھارے ساتھ جو کیا ہے۔وہ اپنی حق اور عشق کے ہاتھوں مجبور ہو کر کیا ہے۔ہمارے درمیان جو کل رات کو ہوا تھا۔ وہ گناہ نہیں ہے۔چلو شاباش اپنے رونا بند کرو اور اس پل کو میرے ساتھ انجوائے کرو۔”
اُسکی بات پر وہ شدید غصے سے کہنے لگا تو اُسے اپنی غصے کی وجہ سے آنسوؤں بہاتے ہوئے دیکھ وہ نرمی سے کہنے لگا۔جبکہ اُسکی سبز آنکھیں نمی کی وجہ سے اب چمک رہی تھیں جہنیں دیکھ وہ مہبوت ہوکر رہ گیا اور اُن سبز آنکھوں پر جھک کر ایک گستاخی کر گیا۔اور جب وہ دور ہوا تو اُسکی نظریں اُسکی ابتر سراپے پر جم کر رہ گئی۔
” پلیز مجھے اس طرح مت دیکھیں۔۔””
روحین کو جب اپنی بے ترتیب حلیے کا احساس ہوا تو وہ تیزی سے خود کو بلینکٹ میں چھپانے لگی۔ اُسے اسطرح کرتے ہوئے دیکھ فرغام سلطان معنی خیزی سے مسکرایا۔تو اُسکی نظروں سے سٹپٹا کر وہ اپنے سینے تک بلینکٹ کو اچھے سے درست کرنے لگی۔
“تو کیسے دیکھوں روحی جاناں۔؟؟
معنی خیزی سے کہتا وہ اُسکے ہوش اڑا رہا تھا۔
“آپ مجھے دیکھیے ہی نہ کیونکہ مجھے آپ سے۔”
اُسکی بولتی نظروں سے سٹپٹاتی ہوئی بولنے لگی۔
“مجھ سے کیا۔۔؟
وہ مخمور آنکھیں گلابی ہونٹوں پر تکا کر گھمبیر لہجے میں پوچھنے لگا۔
“مجھے آپ سے۔”
روحین اپنی گلابی ہونٹوں پر اُن گستاخ بولتی آنکھوں کو محسوس کرتی شرم اور گھبراہٹ کے مارے کچھ بول نہیں پا رہی تھی۔
“ہاں بولو مجھ سے کیا۔؟
وہ اپنی معنی خیز نظروں سے اُسے خود میں سمٹنے اور شرم سے سرخ ہوتیں ہوئے دیکھ کر بوجھل لہجے میں پوچھنے لگا۔
“مم۔مجھے آپکی نظروں سے ڈر لگ رہا ہے۔””
بلاآخر وہ تیزی سے بولی۔
“وہ کیوں۔؟
فرغام سلطان مسکراتی ہونٹوں سے زومعنی انداز میں پوچھنے لگا۔
“آپکی نظریں گستاخ بن گئی ہے اسی لیے۔”
وہ اُسکی بے باکیت بھرے لہجوں اور نظروں سے شرم سے پانی پانی ہوتی اور خوف سے پیسنے میں پوری شرابور اپنی نظریں نیچے جھکا کر بولی۔تو فرغام سلطان اُسکی بات پر اُسے کمر سے پکڑ کر اُسکی شولڈر سے تھوڑا سا بلینکٹ ہٹا کر اپنے وہاں اپنے ہونٹ رکھ کر اُسے کپکپانے پر مجبور کر گیا۔۔
“جب سامنے اتنی کیوٹ انوسنٹ بیوی ہو۔ تو نظریں خود بخود گستاخیاں کرنے پر مجبور ہو جاتیں ہیں۔”
شولڈر پر سے اپنے لب ہٹاتا خمار آلود لہجے میں کہتا وہ اچانک سے اُسے پیچھے تکیے پر گرا کر خود اُسکی گردن پر جھک کر اپنا عقیدت بھرا لمس چھوڑنے لگا۔۔
“آپ اتنے بدل کیوں گئے ہیں۔؟
وہ اُسکی گستاخیوں سے ڈرتی تڑپ کر بولی۔فرغام سلطان سر اوپر اٹھا کر سرمئی نشیلی آنکھوں کو سبز آنکھوں میں ڈالے اُسکی سیب کی طرح سرخ ہوتے چہرے کو دیکھنے لگا۔
“تُم اتنی پیاری کیوں لگنے لگی ہو۔؟
وہ اُلٹا اُس سے یہ سوال پوچھنے کے بعد دوبارہ اپنی گستاخیوں سے اُسے مچلنے اور رونے پر مجبور کرنے لگا۔۔جبکہ روحین اُسکے چوڑے سینے پر ہاتھ رکھتی اُسے خود سے دور کر رہی تھیں۔
“آہہہہ چھ۔چھوڑیں مجھے۔۔””
وہ روتی ہوئی اُسکے پہاڑ جیسے مضبوط جسم کو اپنے اوپر سے ہٹانے کی کوشش میں ہلکان ہوکر سخت بے بسی سے رو کر کہنے لگی ۔
“ایک شرط پر۔۔”
وہ مضبوطی سے اُسکی کلائیوں کو جکڑتے ہوئے کہنے لگا۔
“کک۔۔۔کیسی شرط۔۔؟
روحین اُسکی جانب دیکھتی ہوئی پوچھنے لگی۔
“تُم مجھ سے اب نہیں ڈرؤ گی۔”
گھمبیر آواز میں کہتا وہ اُسے دیکھنے لگا۔جو اب نظریں نیچے جھکا کر اُسے سُن رہی تھیں۔
“میں وعدہ کرتی ہو میں آپ سے نہیں ڈرؤ گی۔”
جان چھڑانے کیلئے جلدی سے یہ کہتی وہ اُسکی آنکھوں میں دیکھنے سے اجتناب برتنے لگی۔تو فرغام سلطان نے اُسے نظریں چُراتے ہوئے دیکھا تو یکدم سے ایک ہاتھ سے اُسکی کلائی کو پکڑ کر دوسرے سے اُسکی نازک کمر کو پکڑتے ہوئے اُسے جھٹکے سے اپنے مزید قریب کرتا وہ اسکی پیشانی سے پیشانی کو ٹکا کر اُسکی سانسوں پر قابض ہوگیا۔
“یہ بات میری آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بنا ڈرے کہوں کہ اب تُم اپنے سلطان سے بالکل بھی نہیں ڈرؤ گی بلکہ تُم اس شیطان کو ڈراؤ گی،اپنی معصومیت سے بہکاؤ گی۔۔”
اُسکی سانسوں کو اپنی سانسوں کی قید سے آزاد کرنے کے بعد اُسکی کمر پر گرفت سخت کرتا وہ جزبوں کی گرمی لیے بھاری آواز میں کہنے لگا۔تو روحین اُسکی گرم سانسوں کے تھپیڑوں کو اپنی گردن پر محسوس کرتی اپنی ہتھیلیوں کو بھیگتے ہوئے شدت سے محسوس کرنے لگی۔
“میں سچ میں آپ سے نہیں ڈرؤ گی،پلیز اب تو مجھے چھ۔چھوڑیں ناں۔”
روحین اُسکی گستاخ لبوں کو پھر سے اپنی لبوں کی جانب بڑھتے ہوئے دیکھ تڑپ کر بولی ۔
“میں کیسے یقین کرو تُم پر روحی جاناں۔؟
وہ اچانک سے کروٹ بدل کر اُسے اپنے اوپر گراتا معنی خیزی سے ایک آنکھ ونک کرتا پوچھنے لگا۔
“میں آپکو کیسے یقین دلاؤ۔؟
بے بسی سے کہتی وہ اپنی نظریں شرم سے اُسکے چوڑے برہنہ سینے ہٹا کر دوسری طرف دیکھنے لگی۔
“یہاں کس کر کے.”
فرغام سلطان نے ایک ہاتھ سے اُسکی ٹھوڈی سے پکڑ کر اُسکا جھکا ہوا چہرا اوپر اٹھایا اور دوسرے ہاتھ کو اپنے لبوں پر رکھتے ہوئے زومعنی انداز میں اُس سے ایک بے باک فرمائش کرنے لگا۔
“کیا۔”

Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ

is accessible Free of charge In PDF Organization And Allowed To Download And Peruse On the web. Sumyia Baloch an Extremely Intriguing Story And All Urdu Books assortments Accessible For You.


Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ

is One Of The Most outstanding Urdu Novel Composed By Sumyia Baloch is accessible Free of charge In PDF Organization And This Writer Is Extremely Well known For His Best Urdu Books And He Composing Best Urdu Books Like Social, Heartfelt, Activity, and Wrongdoing, Sumyia Baloch accessible Free of charge In PDF Organization And Has the Most ideal Urdu novel assortments That anyone could hope to find Bunny For nothing In PDF Configuration.

 

Ishq E Zulmat Novel By Sumyia Baloch Complete – ZNZ

Zubinovelszone.com is the Unparalleled Has All Urdu novel assortments Accessible For nothing And Everybody Read And Download All Urdu Books. Pakistan All Urdu Books Writers assortments Accessible Bunny Simple To Download Simple To Peruse On the web. This Site is For All to appreciate And is Not difficult To Utilize Like Relatives.

 

      1,221+ Pages · 2024 · 11.52 MB · Urdu

New Novel Fida E Jana Novel By Sumyia Baloch – ZNZ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *